counter easy hit

نان اور بریانی کا زمانہ ہوا پُرانا۔۔۔۔ کراچی کی مجلس عزا میں عزاداروں کو بطور تبرک کیا چیز تقسیم کی جانے لگی؟ جان کر عمران خان بھی خوش ہونگے

لاہور(ویب ڈیسک) عام طور پر مجلس عزا کے بعدبریانی ، نان یا اس قسم کی دوسری چیزیں نیاز کے طور پر تقسیم کی جاتی ہیں تاہم اس روایتی لنگر میں پودوں کا اضافہ کیا گیا ہے، مجالس کے اختتام پر نیاز کے ساتھ پودے بھی تقسیم ہونے لگے۔اس منفرد خیال نے ’درخت  لگائیں حسین کے لیے ‘مہم کا آغاز کیا ہے جسے سوشل میڈیا سمیت دیگر پلیٹ فارمز پر بے پناہ سراہا جا رہا ہے۔مجالس عزا میں پودے تقسیم کرنے کا یہ عمل ماحول کے لئے ایک بڑی سطح پر فائدہ مند ہے۔ ہیش ٹیگ ’پلانٹ فار حسین ‘ نامی اس مہم میں پودے مجلس عزا میں شریک افراد کو تقسیم کیے جاتے ہیں۔ لاہور کے نوجوانوں کی شروع کی گئی مہم سے کراچی کے نوجوان بھی متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکے، انہوں نے بھی اپنے گھروں پر منعقد کی جانے والی مجالس کے اختتام پر پودے تقسیم کرنے کا ہتمام کیا۔ ملک کے دو بڑے شہروں میں سر گرم اس مہم کا مقصد پودے تقسیم کرنے کا یہ عمل صرف مجالس عزا تک محدود رکھنا نہیں ہے بلکہ میلاد النبیﷺ اور دیگر اجتماعات میں بھی اس عمل کو فروغ دیا جانا چاہئے۔ اس مہم کا آغاز کیسے ہوا۔خیال نو نامی ایک تنظیم گزشتہ پانچ سال سے بین المسالک تفرقے کو ختم کرنے کے لیے اپنا حصہ ڈال رہے ہیں۔آئیڈیاز نو گزشتہ پانچ سال سے مسلسل ماہِ رمضان المبارک میں شیعہ مسلمانوں کو امام حسنؓ کی ولادت کے موقع پر اکٹھا کر کہ اہل سنت مسجد میں لے کر جاتے ہیں، وہاں دونوں مسالک کی نماز اور افطار اکٹھے کرواتے ہیں۔ زشتہ تین سال سے یہ تنظیم اہل سنت مسلمانوں کو ماہ محرم الحرام میں شیعہ مسجد میں بلواتے ہیں اور وہاں مجلس امامِ حسینؓ کا اہتمام کرتے ہیں۔ملک میں محبت، اتحاد، بھائی چارے برداشت و ایثار جیسے جذبوں کی حوصلہ افزائی کرنے اور فروغ دینے والی اس تنظیم نے اس سال کی مجلس عزا حاضرین مجلس کو پودے بطور تبرک تقسیم کر کے نئی روایت کا آغاز کیا۔تنظیم کے مطابق ملک بھر میں قیام امن کے لیے کی جانے والی کاوشیں اور معاشرے میں تبدیلی لانے کے خواہاں ان نوجوانوں کو تنظیم کی شروعات کے وقت بے شمار باتیں سننے کو ملیں۔حکومت کی شجر کاری مہم:وفاقی حکومت نے بھی شجر کاری مہم کا آغاز کر رکھا ہے۔’پلانٹ فار پاکستان‘ مہم میں حکومت پاکستان پانچ سال میں پورے ملک میں 10 ارب درخت لگانے کا ارادہ رکھتی ہے۔پانچ سال مسلسل جاری رہنے والی اس مہم میں بھی مجلس میں دیے جانے والے پودے اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔

IN, KARACHI, ON, MAJALIS, AZA, INSTEAD, OF, FOOD, WHAT, IS, DISSEMINATED, AMONG, AZADARS, IMRAN KHAN, WILL, LOVE, TO, HEAR, THE, NEWSIN, KARACHI, ON, MAJALIS, AZA, INSTEAD, OF, FOOD, WHAT, IS, DISSEMINATED, AMONG, AZADARS, IMRAN KHAN, WILL, LOVE, TO, HEAR, THE, NEWSIN, KARACHI, ON, MAJALIS, AZA, INSTEAD, OF, FOOD, WHAT, IS, DISSEMINATED, AMONG, AZADARS, IMRAN KHAN, WILL, LOVE, TO, HEAR, THE, NEWS

IN, KARACHI, ON, MAJALIS, AZA, INSTEAD, OF, FOOD, WHAT, IS, DISSEMINATED, AMONG, AZADARS, IMRAN KHAN, WILL, LOVE, TO, HEAR, THE, NEWS

About MH Kazmi

Journalism is not something we are earning, it is the treasure that we have to save for our generations. Strong believer of constructive role of Journalism in future world.

Connect

Follow on Twitter Connect on Facebook View all Posts Visit Website