counter easy hit

جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ کا معاملہ، اہلکاروں کے بیانات قلمبند

اہور:  لاہور میں جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ کا معاملہ، جے آئی ٹی کی جانب سے مختلف پہلوؤں پر تحقیقات کا سلسلہ جاری ہے، اراکین نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا اور سکیورٹی پر مامور اہلکاروں کے بیانات قلمبند کئے۔

The case of firing at the house of Justice Ejaz Al-Ahsan, the statements of the personnel were recordedذرائع کے مطابق 5 رکنی جے آئی ٹی کے ممبران نے ماڈل ٹاؤن میں جائے وقوعہ کا دورہ کیا۔ سی سی ٹی وی فوٹیجز اور شواہد کی روشنی میں مختلف پہلوؤں سے جائزہ لیا جبکہ ڈیوٹی پر موجود سکیورٹی اہلکاروں کے بیانات بھی قلمبند کئے گئے۔

ذرائع کے مطابق جے آئی ٹی کی جانب سے واقعہ کی ابتدائی رپورٹ آج پیش کرنے کا امکان ہے۔ واقعہ کی شفاف تحقیقات کے لئے گزشتہ روز 5 رکنی جے آئی ٹی تشکیل دی گئی تھی جس کے کنوینئر ایڈیشنل آئی جی ویلفیئر اینڈ فنانس محمد طاہر ہیں جبکہ دیگر ممبران میں ڈی آئی جی انوسٹی گیشن چوہدری سلطان، آئی ایس آئی، ایم آئی اور آئی بی کے نمائندے شامل ہیں۔

You must be logged in to post a comment Login